Recent-Post

header ads

ہندہ نے اپنے شوہر سے خلع کیا لیکن ابھی تک طے شدہ رقم نہیں ادا کی اور دوسرے سے نکاح کر لیا تو یہ نکاح شرعاً منعقد ہوا کہ نہیں؟ بینوا توجروا۔

 مسئلہ: از محمد انور علی پردان موضع اہڑوا پوسٹ اودے راج گنج۔ ضلع بستی

ہندہ نے اپنے شوہر سے خلع کیا لیکن ابھی تک طے شدہ رقم نہیں ادا کی اور دوسرے سے نکاح کر لیا تو یہ نکاح شرعاً منعقد ہوا کہ نہیں؟  بینوا توجروا۔

الجواب: چونکہ نفس خلع سے طلاق بائن پڑ جاتی ہے عورت خواہ اسی وقت مال ادا کرے یا کچھ دنوں بعد۔ اس لئے دوسرے آدمی سے نکاح شرعاً منعقد ہو گیا ہدایہ اولین ص ۳۷۴باب الخلع میں ہے: فاذا فعل ذلک وقع بالخلع تطلیقۃ بائنۃ ولزمھا المال… یعنی جب شوہر مال کے بدلے خلع کرے تو خلع کی وجہ سے عورت پر طلاق بائن پڑ جائے گی اور اس کو مال دینا واجب ہو گا۔ ھٰذا ما ظھرلی والعلم بالحق عند اللّٰہ تعالی ورسولہ جل مجدہ وصلی اللّٰہ علیہ وسلم

کتبہ: جلال الدین احمد الامجدی

یکم محرم الحرام ۱۳۸۷ھ؁


ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے